I am Shehroz Akram; a common programming engineer moved on from a university in Islamabad. In the same way as others do, after the fruition of my degree I began working in various firms and multi universal organizations. Looked like life has accomplished it’s objective and I’m at long last entire. Be that as it may, who realizes what nature gets ready for one.

Sudden death of my dad was an incredible shock to me and my family. We had a little privately-owned company and being the only male child I needed to come back to Burewala to assume the liability on my shoulders.

Life was again picking up staleness yet something was all the while missing; that was my own particular creativity. That creative Sheroz needed to introduce himself at some place.

In 2010 Mom’s kitchen was only my brainchild. This year I took a shot at it and promoted it with the assistance of my mom’s cooking knowledge. Iam commited to provide Safe Healthy and Tasty food around the city.. We have a wide menu of freshly home-baked treats.. And are just a call away!

In this online sustenance kitchen my need was to be steadfast with my origin and furnish individuals with most clean nourishment and a finger licking taste. Here I might likewise want to recognize my strong family who had faith in me and regarded my thought.

Wherever you go no sustenance can think about “maa k hath ka khana” so if your mother has gone to see your close relative or is a jobee don’t stress in light of the fact that maa k hath ka khana is only a summon. Excellent food is now only one call away!

I hope this activity keeps going long and acquires a new trend in Burewala.

میں شہروذ اکرم ہوں اور ایک پروگرامنگ انجینئر ہوں. اسی طریقے سے جیسے دوسرے عام لوگ کرتے ہیں اپنی ڈگری مکمل ہونے کے بعد میں نے مختلف فرمز اور ملٹی یونیورسل تنظیموں میں کام کا آغاز کیا. دکھائی ایسے دیتا تھا کہ زندگی کا مقصد پودا ہوگیا ہے اور اپنی طویل زندگی گزار چکا ہوں. یہ ایسے ہئ جیسے کہ کسی ایک کے لیے قدرت نے اپنے ہاں کیا رکھا ہے.

اور اچانک سے میرے والد کا گزر جانا ایک بہت بڑا صدمہ تھا اور دلخراش تھا میرے لیے اور میرے پورے خاندان کے لئے. ہمارے پاس چھوٹی سی ذاتی کمپنی تھی اور گھر میں بڑا ہونے کی وجہ سے مجھے بوریوالا واپس آنا پڑا. تاکہ باقی زمہ داریوں کو اپنے کندھوں پر لے سکوں.
زندگی پھر سے رفتار پکڑنے لگی لیکن پھر بھی کچھ نہ کچھ نا مکمل تھا اور یہ میری اپنی ہی زہنیت تھی.

اس تخلیقی شہروز کو کسی مقام پر اپنے آپ کو ظاہر کرنے کی ضرورت تھی.
2010ء تک Moms Kitchen میری سوچ کا محور تھا. میں نے اس چیز پر کام کیا اور میں نے اس کام کو اپنی ماں کئ کھانوں کے متعلق علم اور نگرانی میں شروع کردیا. اس اون لائن سسٹم , کھانا بنانے, انگلیاں چاٹنے والے ذائقے اور پر فضا ماحول کو بنائے رکھنا ایک مشکل کام تھا. اور میرے گھر والے جن کو میرے اوپر اعتماد تھا میری مدد کی..

آپ کہیں بھی جاتے ہو آپ کو ماں کے ہاتھ کے کھانے کے علاوہ کچھ نہیں سوجھتا اور اگر آپ کی والدہ کسی قریبی رشتہ دار کے ہاں گئی ہو اور کہیں جاب کرتیں ہوں تو ایسے میں آپ کو صرف ماں کے ہاتھ کا کھانا اچھا لگتا ہے آپ Moms Kitchen پر ارڈر کریں اور صاف مزے دار کھانے کھا سکتے ہیں… میں امید کرتا ہوں کہ یہ چیز بوریوالا میں کافی عرصہ تک چلے اور بوریوالا میں ا چھا رواج ڈلے گا.

Categories: Get Inspired

0 Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

eighteen − nine =

0